• English
Home > تازہ ترین/جدید ٹیکنالوجی > ہیپس

ہیپس print

 

ہیپس

‘‘ڈیجیٹل ڈیوائڈ’’ کی اصطلاح ہماری بات چیت میں اکثر استعمال کی جاتی ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ دنیا کو دو حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے: ایک حصہ وہ ہے جسے جدید دور کے آئی سی ٹیز کی مکمل رسائی حاصل ہے اور دوسرا حصہ مکمل طور پر ایسی تمام ٹیکنالوجی اور ترقی کے بے شمار فوائد سے محروم ہے۔

اصل میں دو اہم پہلوہیں جو نئی ٹیکنالوجیز اور سروسز کو ترقی دیتے ہیں۔ سب سے پہلے ایک انسانی پہلو ہے : جس کا مطلب ہے کہ دنیا بھر میں تمام لوگوں کو ان کی قومیتوں، زبانوں، جغرافیائی حدود وغیرہ سے قطع نظر انفرااسٹریکچرمعلومات کی عالمگیر رسائی ملنا چاہئے۔  

دوسرا پہلو معاشی ہے۔ جیسا کہ ہم جانتے ہیں کہ امیریا ترقی یافتہ مارکیٹیں پہلے ہی لبریز ہیں اور کاروبار چلائے رکھنے کے لئے وہاں نئی سروسز، ٹیکنالوجی اور مارکیٹوں کے لیے اشد ضرورت ہے۔ ایسی ہی ایک نئے ذہین ٹیکنالوجی ‘‘ سٹرواسپیرک ریڈیو’’ یا ھیپس (ہائی اونچائی کا پلیٹ فارم اسٹیشن ) ہے۔

ہیپس زمین کے اوپر تقریباً ۲۰ کلومیٹر کے فاصلے پر کام کرتے ہیں۔ یہ ایک اہم سوال ہے کہ ہم نے تقریباْ ۲۰ کلومیٹر کی اونچائی کا انتخاب کیوں کیا ہے۔ تو اس سوال کا جواب یہ ہے کہ اس اونچائی پر ہوا کی رفتار تقریباً صفر ہے یا ہونے کے برابر ہے۔

ریڈیو ضابطوں میں ہیپس کی مندرجہ ذیل تعریف کی گئی ہے:

پی آر نمبر ۶۶۔۱ اے : ایک اسٹیشن کسی چیز پر ۲۰ سے ۵۰ کلومیٹر کی اونچائی پر اور ایک مخصوص، برائے نام، زمین پر قریبی فکسڈ نقطہ واقع ہے۔

پی آر نمبر۱۵۔۴ اے : ٹرانسمیشن کیلئے یا اونچے پلیٹ فارم اسٹیشنز سے خاص طور پر آرٹیکل ۵ کی شناخت بینڈ کو محدود کیا جائے گا۔

ہیپس سیٹلائیٹ اور ٹرسیٹریل سسٹمز کے بھترین خصوصیات کو یکجا کرتا ہے۔ یہ مختصر راؤنڈ ٹرپ ڈیلے (آر ٹی ڈی) کے طور پر سیٹلائیٹ مواصلات کے مقابلے میں ہے۔ جیسے چھوٹے پروپیگیشن کو نقصان ہوتا ہے جب سیٹلائیٹ سے مقابلہ ہو۔ ایک ہیپس کو جب ٹریسٹریل اسٹیشن سے موازنہ کیا جائے تو یہ کافی بڑے علاقے کا احاطہ کرسکتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ کہ ہیپس دوستانہ ماحول میں حل پیش کرتا ہے۔ دوبارہ استعمال کی بڑی صلاحیت کی پیشکش ہیپس میں ممکن ہے۔

 ہیپس کیلئے فراہمی کو ابتدائی طور پرفکسڈ سروس کے طور پر ڈبلیو آر سی ۹۷ کی طرف سے دیا گیا تھا۔ یہ فیصلہ اس نئی ٹیکنالوجی کی ترقی کی مالی امداد کی راہ میں حائل رکاوٹیں یا غیر یقینی کیفیات کو ہٹا دیا گیا ہے۔ ڈبلیو آر سی ۲۰۰۰ کے دوران، کئی ممالک میں ریجن ۳ اور ایک ملک میں ریجن ۱ ایک کم فریکونسی بینڈ کیلئے ضرورت  کا اظہار کرتا ہے، ہیپس کیلئے ضرورت سے زیادہ بارش کی کمزوری کی وجہ سے ان ممالک میں اس وقت ۴۷ گیگاھرٹز پر ہوتی ہے۔اس طرح کی درخواست ریجن۲ ممالک کے ساتھ بنائی گئ تھی۔

مذکورہ ممالک کی طرف سے ضرورت کے اظہار کو ایڈجسٹ کرنے کے سلسلہ میں ، ڈبلیو آر سی ۲۰۰۰نے نمبرز ۵۳۷۔۵ اے اور ۵۴۳۔۵ اے کو اپنایا جو ڈبلیو آر سی ۰۳ سے نظرثانی شدہ تھے اور تب دوبارہ ڈبلیو آر سی ۰۷ سےفکسڈ سروس میں ہیپس کو مستقل استعمال کیا اور بعض ریجن ۱ اور ۳ ممالک پر غیر نقصان دہ مداخلت، عدم تحفظ کی بنیاد پر بینڈ ۲۔۲۸ـ۹۔۷۲ گیگاھرٹز اور بینڈ ۳۔۳۱ـ۳۱ گیگاھرٹز میں۔

ڈبلیو آر سی ۰۳ ترمیم شدہ نمبر ۵۴۳۔۵ اے سگنل لیولز کی وضاحت کیلئے اس سیٹلائٹ کی غیر فعال سروسز اور ریڈیو ھگول سائنس اسٹیشنوں کی بینڈ ۳۔۳۱ تا ۸۔۳۱ گیگاھرٹز میں حفاظت کرے گا۔ آئٹییو آر فکسڈ سروس میں ہیپس کو استعمال کرتے ہوئے سسٹمز کے درمیان اشتراک سے نمٹنے کیلئے منظم مطالعہ کرتا ہے اور دوسری اقسام کے سسٹمز میں بینڈ ۹۔۲۷ تا ۲۔۲۸ گیگاھرٹز اور ۳۱ تا ۳۔۳۱ گیگاھرٹز کے فکسڈ سروسز میں نتائج کو آئٹییو آر ایف ۱۶۰۹ کی سفارش کرتا ہے۔

نمبرز۵۳۷۔۵اے اور ۵۴۳۔۵ اے میں درج انتظامیہ جو ۹۔۷۲ تا ۲۔۲۸ گیگاھرٹز اور ۳۱ تا ۳۔۳۱ گیگاھرٹز بینڈ میں مقررہ سروس میں ہیپس کا استعمال کرتے ہوئے نظام کو نافذ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں ، یہ بنیادی خدمات کی ان اسٹیشنوں کے حوالے سے متعلقہ انتظامیہ کی واضح معاہدے کو حاصل کرنے کی کوشش کرے گا، بات کا یقین کرنے کے لئے کہ ان حالات میں نمبرز ۵۳۷۔۵ اے اور ۵۴۳۔۵ اے مل رہے ہیں اورریجن ۲ میں انکی ایڈمنسٹریشنز جو ان بینڈز کی فکسڈ سروسز میں ھیپس کو استعمال کرنے والے سسٹمز پر عملدرآمد کرانے کیلئے مقرر ہے، کام کی سروسز کے آرٹیکل ۵ فریکونسی ایلوکیشن کی ٹیبل کے مطابق ان اسٹیشنوں کے حوالے سے متعلقھ انتظامیھ کی واضح معاہدے حاصل کرے گا، اس بات کا یقین کرنے کیلئے کہ حل۱ اور حل۳ان حالات میں مل رہے ہیں۔

بینڈز ۰۲۵ ۲ـ۸۸۵ ۱ اور ۲۰۰ ۲ـ۰۱۱ ۲ میگاھرٹز نمبر ۳۸۸۔۵ میں شناخت کے طور پرآئی ایم ٹی کیلئے دنیا بھر کی بنیاد پر استعمال کیلئے ارادہ کررہے ہیں،آئی ایم ٹی کے ٹریسٹریل اور سیٹلائیٹ اجزاء کے لئے بینڈز ۰۱۰ ۲ـ۰۸۹ ۱ میگاھرٹز اور ۰۰۲ ۲ـ۰۷۱ ۲ میگاھرٹز بھی شامل ہیں۔

ہیپس کا استعمال بطور اسٹیشنز آئی ایم ٹی کے ٹرسٹریل اجزا کے اندر ایڈمنسٹریشنز کیلئے اختیاری ہے، اور اس طرح استعمال دیگر ٹریسٹریل آئی ایم ٹی کے استعمال پر کوئی ترجیح نہیں ہونا چاھئے۔

یہ بینڈز ایک سہ پرائمری بنیاد پر فکسڈ اور موبائل کی سروسز کے لئے مختص کر رہے ہیں ۔

آئیٹییو آر آئی ایم ٹی کے ساتھ ہیپس اور دوسرے اسٹینز کے درمیان اشتراک اور رابطوں کا مطالعھ کیا، آئی ایم ٹی کے اندر ملحقھ بینڈ میں ایلوکیشن ہونے سے کچھ سروسز کے ساتھ ھیپس کی مطابقت پر غور کیا اور آئیٹییو آر ایم ۱۴۵۶ سفارشات کی منظوری دی ہے۔

کیوکام ھیپس لمیٹڈ جمہوریھ آئرلینڈ میں ایک کمپنی ہے۔ بنیادی سروس کو ایک سروس ڈیلیوری پلیٹ فارم فراہم کرتی ہے۔ تجارتی طور پر یہ ‘‘کیوکام ہیپس کمیونیکیشن پلیٹ فارم’’ کے طور پر بھی جانی جاتی ہے۔ بنیادی طور پر یہ پلیٹ فارم ایک انتہائی اونچا پلیٹ فارم اسٹیشن (‘‘ہیپس’’) ایک رھنما ایم ۵۵ کی انتہائی اونچائی پر ایک مخصوص کوریڈور جو ایک اونچائی تقرئباً ۲۰ کلومیٹر پر طیارے کا استعمال کرتے ہوئے پروازسے سروس فراہم کرتا ہے ۔ آج کی تاریخ میں،یہ پلیٹ فارم دنیا کو دی ون اینڈ اونلی (ایک اور صرف) کمرشل ہیپس سروس آفر کرتا ہے۔