• English
Home > آن لائن سوالات > سیٹلائیٹ رابطہ

سیٹلائیٹ رابطہ print

 

سیٹلائیٹ رابطہ سے متعلق سوالات

اکثر پوچھے گئے سوالات

سوال۱۔ ھم آئیٹییو سے ارضی اسیٹیشنز اور اسپیس کے اعداد و شمار کیوں جمع کرتے ہیں؟

جواب۔ آئیٹییو کے لئے ارضی اسٹیشنوں اور اسپیس دونوں جگہوں سے اعداد و شمار جمع کرنا ضروری ہے، اس لئے کہ متعلقہ  فریکونسی کے اسائمنٹس ماسٹر انٹرنیشنل فریکونسی رجسٹر(ایم آئی ای آر) میں شمولیت اختیار کریں، اس طرح آئی ٹی یو آر ریڈیو ریگولیشن کے آرٹیکل ۸ کی شرائط کے مطابق بین الاقوامی شناخت حاصل ہوتی ہے۔

 

 سوال۲۔ آئٹییومیں انتظامیہ کی طرف سے ایک اطلاع کا ھم کیا مطلب اخذ کریں؟

جواب۔ جیسا کہ آئیٹییو آر ریڈیو ریگولیشنز کے آرٹیکل ۱ کے آر آر نمبر۲۔۱ کے مطابق ‘‘ کوئی بھی سرکاری محکمھ یا سروس انٹرنیشنل ٹیلی کمیونیکیشن یونین کے آئین میں، انٹرنیشنل ٹیلی کمیونیکیشن یونین کے کنونشن میں اور انتظامیہ کے ضابطے میں دی گئی ذمہ داریوں کو نبھانے کیلئے ذمہ دار ہے۔(سی ایس ۱۰۰۲)’’

 

سوال۳۔  سیٹلائٹ فریکوئنسی کوآرڈینیشن کیا ہے؟

جواب۔  سیٹلائٹ فریکوئنسی کوآرڈینیشن ایک نظام ہے جس میں دو یا دو سے زیادہ فریقین (ان کے متعلقہ مصنوعی سیارہ کیلئے ذمہ دار) سیٹلائٹ نیٹ ورکس کی ہموار اور مداخلت کے آپریشن کے لیے تکنیکی یا ریگولیٹری مذاکرات میں مشغول ہے۔ اس عمل میں بھی مصنوعی سیارہ اور دوسرے ریڈیو زیر غور فریکوئنسی بینڈ میں مساوی حقوق پر آپریٹنگ سسٹم سے متعلق تکنیکی ڈیٹا کا تبادلہ شامل ہے۔

 

سوال۴۔ سیٹلائٹ فریکوئنسی کوآرڈینیشن کا مقصد کیا ہے؟

جواب۔ سیٹلائٹ فریکوئنسی کوآرڈینیشن کا بنیادی مقصد اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ موجودہ بہت سے دیگر آپریشنل ریڈیو کے نظام کی مارکیٹ میں نئے داخل ہونے والے مصنوعی سیارہ کو بغیر کسی نتیجے یا نقصان دہ مداخلت کے چلانا ہے ۔ جیسا کہ سی ایس ۷ کے آئٹییو کے آئین کے مطابق،‘‘ رکن ریاستوں کو اس آئین کی شقوں ، کنونشن اور انتظامی ضابطوں میں تمام ٹیلی کمیونیکیشن دفاتر اور اسٹیشنز ان کی طرف سے قائم یا چل رہے ہیں جوبین الاقوامی سروسز میں مشغول ہیں یا جو دوسرے ممالک کے ریڈیو کی سروسز کے لئے نقصان دہ مداخلت پیدا کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں

سوال ۵۔ کیا آپ آئٹییو کے بارے میں کچھ معلومات فراہم کر سکتے ہیں؟

جواب۔ آئٹییو (انٹرنیشنل ٹیلی کمیونیکیشن یونین) معلومات اور کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کے لئے اقوام متحدہ کا خصوصی ادارہ ہے۔ آئٹییو ۱۸۶۵ میں پیرس میں بین الاقوامی ٹیلی گراف یونین کے طور پر قائم کی گئی ۔ اس کا موجودہ نام۱۹۳۴ میں رکھا گیا اور ۱۹۴۷ میں یہ اقوام متحدہ کا ایک خصوصی ادارہ بن گیا۔ آئٹییو عالمی ریڈیو سپیکٹرم اور سیٹیلائیٹ مدار مختص کرنے کا ذمہ دار ہے، تکنیکی معیار فراہم کرتا ہے کہ نیٹ ورکس کو یقینی بنائے اور ٹیکنالوجیز کا بغیر کسی رکاوٹ کے تعلق قائم رکھنا اور آئی سی ٹیز کی ورلڈ وائڈ کمیونیٹیز کی رسائی کو بہتر بنانے کیلئے کوششیں کرتا ہے۔ مزید معلومات کیلئے براہ مہربانی ملاحظہ کریں۔ www.itu.int

 

سوال ۶۔ کیا آئٹییو اس کے قوانین کو نافذ کرنے کے لئے ایک اتھارٹی ہے؟

جواب۔  آئٹییو کے تمام اراکین ریاستوں میں اپنے فیصلوں میں خودمختار ہیں جب ان کی اپنی حدود میں بنائے گئے قوانین تحت آتے ہیں ، تاہم، ہم آہنگی اور دنیا بھر میں وائرلیس نظام کی مداخلت کے مفت آپریشن کے مقصد کے لئے اراکین کی ریاستیں آئٹییو کے قوانین اور ضوابط کے طور پر( جس حد تک ممکن ہو) کی طرف سے پاسداری کرنے کے لئے اخلاقی ذمہ دار ہیں، جس پر اراکین کی ریاستوں کے آئٹییو کے کنونشن اور آئین کے معاہدے کی حیثیت ہونے کے لئے دستخط ہیں۔

 

سوال ۷۔ آئٹییو کے ایک رکن ہونے کے کیا فوائد ہیں؟
جواب۔ آئٹییو ایک دوسرے کے ساتھ مل کر آئیڈیاز شیئر کرنے، علم اور بہترین پریکٹس کے تبادلھ کے مقصد کیلئے ایک منفرد، غیر جانبداراور گلوبل پلیٹ فارم فراہم کرتا ہے۔ یہ اس کے اراکین میں اتفاق رائے اور سب سے زیادہ شفاف اور منصفانہ ماحول کے ذریعے ایک نئے معیار پر اتفاق کا بھی موقع فراہم کرتا ہے۔ آئٹییو پرارکان کو برابر اور آئی سی ٹیز کے متعلقھ شعبوں میں ان کے مفادات کی حفاظت کرنے کا کافی موقع ہے۔

 

سوال ۸ ۔ سیٹلائٹ فریکوئنسی کوآرڈینیشن میں استعمال کی مدت کے معاہدے کا کیا مطلب ہے؟

جواب۔ فریکونسی کوآرڈینیشن کا معاہدہ یا مختصر حوالہ بحیثیت معاھدہ دو اطراف کے سیٹیلائیٹ نیٹ ورک کا اطلاق تمام آپریشنل حالات یا پیرامیٹرز کی فہرست انتظامیہ کے درمیان فریکونسی کوآرڈینیشن کے عمل کا نتیجہ ھے۔

 

سوال۹۔ ہمیں ریڈیو کے ضابطے اور متعلقہ نظام کی ضرورت کیوں ہے؟

جواب۔ آرآرایس اور متعلقہ نظام بنیادی طور پر ریڈیو فریکونسی کی موثر تفویض یا اسائمنٹ اور جیو اسٹیشنری مدار میں منسلک مدار کی پوزیشن کیلئے ضروری ہے۔

 

سوال ۱۰۔ سیٹلائٹ آئٹییو میں دائر کرنے کے طریقہ کار کے لئے تین اہم اقدامات کیا ہیں؟

جواب۔ سیٹلائٹ آئٹییو میں دائر کرنے کے طریقہ کار میں تین اہم اقدامات اے پی آئی میں جمع کرنا، ڈیٹا کوآرڈینیشن اور ڈیٹا نوٹیفیکیشن شامل ہیں جیسا کہ آئی ٹی یو آر ریڈیو ریگولیشن کے آرٹیکل ۹ اور آرٹیکل ۱۱ میں ہے ۔

 

سوال۱۱۔ برننگ کیلئے ایک سیٹلائیٹ نیٹ ورک (بی آئی یو) استعمال میں ریگولیٹری مدت کیا ہے؟

جواب۔  سیٹلائیٹ نیٹ ورک کیلئے موجودہ بی آئی یو کی مدت کا دورانیہ فی آر آر ایس سات سال ہے، جو اے پی آئی کی جمع کی گئی تاریخ سے شروع ہوتی ہے۔ ماضی میں، سیٹلائیٹ نیٹ ورک کیلئے بی آئی یو کی حد اے پی آئی کی جمع کرانے کی تاریخ سے نو سال تھی۔

 

سوال۱۲۔ کیا بی آئی یو (بیئرنگ اِنٹو یوز) کی اصطلاح سیٹلائیٹ کمیونیکیشن کیلئے استعمال کی جاسکتی ہے؟

جواب۔ بی آئی یو کا مطلب جیو اسٹیشنری زمینی مدار میں مخصوص مدار کی پوزیشن پر ایک سیٹیلائیٹ کو رکھنا اور سروس کی فراہمی شروع کرنا ہے۔

 

سوال۱۳۔ سیٹلائیٹ نیٹ ورک کی فریکونسی کوآرڈینیشن میں ترجیح سے ہمارا کیا مطلب ہے؟

جواب۔ آرآرایس اور متعلقہ نظام بنیادی طور پر موثر اسائنمنٹ کے لئے ضروری ہے۔

 

سوال۱۴۔ جی ایس او سیٹلائیٹ کی عام زندگی کا وقت کیا ہے؟

جواب۔ زیادہ تر جی ایس او سیٹلائیٹ کی زندگی کی مدت کی حد پندرہ سے بیس سال تک ہے۔

 

سوال ۱۵۔ ایک مصنوعی سیارہ کی زندگی کو محدود کرنے میں سب سے اہم پہلو کیا ہے؟

جواب ۔ بورڈ پر ایندھن کی محدود مقدار ایک مصنوعی سیارہ کی زندگی کا تعین کرنے کا پہلو ہے۔

 

سوال۱۶۔ کیا ہمیںمنصوبہ بندی کے بینڈ میں فریکوئنسی کو آرڈینیشن کے طور پر ضرورت ہے؟

جواب۔ جی ہاں، منصوبہ بندی کے بینڈ میں فریکونسی کوآرڈینیشن کی ضرورت ہو گی اگر ذمہ دار انتظامیہ کو ان کے اصل منصوبہ بندی کے اسائنمنٹس پر نظر ثانی کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

 

سوال ۱۷۔ فلنگ سے ہماری کیا مراد ہے؟

جواب۔ فلنگ آئٹییوسے مختلف مراحل پر(تکنیکی اور فریکونسی کوآرڈینیشن انفارمیشن) ڈیٹا جمع کرنے کیلئے اصطلاح استعمال کی جاتی ہے۔ آسان الفاظ میں ہم کہہ سکتے ہیں کہ فلنگ سے مراد ایک سیٹلائیٹ پیپرہے۔

 

سوال۱۸۔ جیو اسٹیشنری زمینی مدار میں زمین سے سیٹلائیٹ کا فاصلہ کیا ہے؟

جواب۔  جیو اسٹیشنری زمینی مدار میں زمین سے سیٹلائیٹ کا فاصلہ تقریبا ۶۸۷۔۵۳ کلومیٹر ہے۔